Home / خبریں / ساہیوال : گودام کی چھت گرنے سے 4 خواتین جاں بحق، 21 زخمی
Saniha Sahiwal

ساہیوال : گودام کی چھت گرنے سے 4 خواتین جاں بحق، 21 زخمی

ساہیوال کے نواحی گاؤں 102 نائن ایل میں تیز بارش میں گودام کی چھت گرنے سے 4 خواتین جاں بحق جبکہ 18 افراد زخمی ہو گئے. تفصیلات کے مطابق ساہیوال کے نواحی گاؤں میں ایک زمیندار کی کپاس کی فصل کی چنائی کیلئے 50 سے زائد محنت کش خواتین گئیں۔

چنائی کے دوران اچانک تیز بارش کے شروع ہونے پر تمام خواتین نے نزدیکی گودام کے اندر پناہ لی۔ لیکن تیز بارش کیوجہ سے گودام کی چھت اچانک گر گئی جس کے باعث تمام خواتین ملبہ کے نیچے دب گئیں۔

جس کی فوری اطلاع 5 بج کر 52 منٹ شام ریسکیو 1122ساہیوال کو کی گئی۔ جس پر ریسکیو 1122کی ٹیمیں موقع پر پہنچ گئیں۔
ریسکیو ذرائع کے مطابق واقعہ میں زخمیوں کی تعداد 18جن میں 5 مرد اور 13خواتین شامل ہیں۔

زخمیوں میں 6 کی حالت تشویش ناک اور 8 کی حالت خطرے سے باہر ہے۔ متعدد زخمیوں کو موقع پر ہی ابتدائی طبی امداد فراہم کی گئی۔

بعدازاں اسسٹنٹ کمشنر ساہیوال صولت حیات وٹو، تحصیلدار ساہیوال مرزا محمد رفیق مغل، ایس ایچ او تھانہ ڈیرہ رحیم چوہدری اللہ دتہ، حلقہ پٹواری فلک شیر نول و دیگر سمیت جائے وقوع پر پہنچ گئے اور واقعہ کی تمام تر تفصیلات اکھٹی کیں۔

انتظامیہ نے اس واقعہ سے متعلق اہل علاقہ کے معززین اور عینی شاہدین سے بھی تفصیلات لیں۔ ریسکیو 1122ساہیوال نے ملبہ کے نیچے دبے تمام زخمیوں کو نکال کر آپریشن مکمل کردیا۔

مسلسل موسلادھار بارش کی وجہ سے ریسکیو ٹیمیوں کو زخمیوں کو ملبے سے نکالنے میں شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔ زخمیوں کی عیادت اور ان کی بہترین طبی دیکھ بھال کے لئے کمشنر ساہیوال ڈویژن سلوت سعید، ڈپٹی کمشنر ساہیوال محمد خضر افضال چوہدری، ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر ساہیوال صادق حسین بلوچ ڈسٹرکٹ ہیڈ کواٹر اینڈ ٹیچنگ ہسپتال ساہیوال پہنچ گئے۔

کمشنر ساہیوال نے ہسپتال انتظامیہ کو ترجیحی بنیادوں پر علاج معالجہ کی سہولیات فراہم کرنے کی ہدایات جاری کردیں۔ وزیراعلیٰ پنجاب چودھری پرویزالٰہی نے ساہیوال میں چھت گرنے سے 4 افراد کے جاں بحق ہونے کے واقعہ پر اظہارافسوس کیا ہے۔

انہوں نے کمشنر ساہیوال ڈویژن سے واقعہ کی رپورٹ طلب کرتے ہوئے ہدایت کی ہے کہ زخمیوں کو علاج معالجہ کی بہترین سہولتیں فراہم کی جائیں۔

ایڈیٹر ارشد فاروق

ارشد فاروق بٹ کالم نگار اور بلاگر ہیں۔ ساہیوال ٹائمز پر آپ خبروں کی کیٹیگری اپڈیٹ کرتے ہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔